استعفے قبول کرنے ہیں تو سب قبول کریں سلیکشن بدنیتی ہے: شاہ محمود

منگل 17 جنوری 2023
icon-facebook icon-twitter icon-whatsapp

رہنما تحریک انصاف شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اسپیکر کو اپنے استعفوں سے متعلق خط لکھا اور ملاقات کیلئے کہا لیکن ہمیں تحریری جواب دیا گیا کہ ایسا نہیں ہوتا،ایک ایک ممبر کو بلاکر تسلی کروں گا۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کو بچانے کیلئے یہ حرکت کی گئی، موجودہ اپوزیشن لیڈر ان کے ہاتھ کی گھڑی ہیں، ہم نےفیصلہ کیا اسپیکر کو درخواست دے کر اپنا اپوزیشن لیڈر نامزد کرائیں گے، لیڈرآف اپوزیشن ہمارا بنتا ہے تو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بھی وہی ہونا چاہیے۔

شاہ محمود نے کہا کہ استعفے قبول کرنے ہیں تو 125 استعفے پڑے ہیں تمام قبول کریں، یہ سلیکشن بدنیتی پر مبنی ہوگی، یہ نظام کے ساتھ کھیلا جارہا ہے، 35استعفوں کی منظوری سے متعلق لائحہ عمل پر مشاورت کریں گے، عدالت نے بھی ایک طریقہ کار کا تعین کیا تھا، اسپیکر نے بھی کہا کہ وہ عدالتی طریقہ کار کے پابند ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے استعفوں پر اعتراض لگایا گیاتھا کہ ہاتھ سے لکھے ہوئے نہیں، الیکشن کمیشن کا غیرجانبدارانہ معیار بتدریج کم ہو رہا ہے، استعفے قبول کرنے ہیں تو سب قبول کریں سلیکشن بدنیتی ہے۔

آپ اور آپ کے پیاروں کی روزمرہ زندگی کو متاثر کرسکنے والے واقعات کی اپ ڈیٹس کے لیے واٹس ایپ پر وی نیوز کا ’آفیشل گروپ‘ یا ’آفیشل چینل‘ جوائن کریں

icon-facebook icon-twitter icon-whatsapp